احتجاج کو طاقت کے ذریعے دبانے‘ پر یورپی یونین کی ایران پر نئی پابندیاں - Baithak News

احتجاج کو طاقت کے ذریعے دبانے‘ پر یورپی یونین کی ایران پر نئی پابندیاں

یورپی یونین نے ایران کے آرمی چیف، سرکاری ریڈیو، ٹی وی اور پاسداران انقلاب کے کمانڈرز پر نئی پابندیاں عائد کر دی ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی نے یورپی یونین کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا ہے کہ یہ پابندیاں طاقت کے ذریعے مظاہرین کو دبانے اور احتجاج کے دوران گرفتار ہونے والے دوسرے شخص کو پھانسی دینے کی وجہ دے لگائی گئی ہیں۔
27 ممالک کے بلاک ڈرونز بنانے والے آٹھ اداروں اور ایئرفورس کے کمانڈرز کو بھی فہرست میں شامل کیا ہے، جس کا مقصد ایران پر پریشر بڑھانا ہے کیونکہ وہ روس کو ڈرون فراہم کر رہا ہے جو یوکرین میں استعمال کیے جا رہے ہیں۔
یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزف بوریل کا کہنا ہے کہ ’ہمارا ہدف وہ لوگ ہیں جو احتجاج کو طاقت کے ذریعے دبانے کے ذمہ دار ہیں۔‘
’اسی طرح تہران کی جانب سے روس کی حمایت اور ڈرونز کی فراہمی بھی ہمارا ہدف ہیں۔‘یورپی یونین کی فہرست میں اسلامک ریپبلک آف ایران براڈکاسٹنگ (آئی آر آئی بی)، اس کے ڈائریکٹرز، ایک ٹی وی اینکر بھی شامل ہیں کیونکہ پکڑے جانے والے افراد کے زبردستی اعتراف جرم نشر کیے۔
اسی طرح ایرانی آرمی چیف عبدالرحیم موسوی، نائب وزیر داخلہ اور پاسداران انقلاب کے علاقائی کمانڈرز کے ویزوں پر پابندی ہو گی جبکہ ان کے اثاثے بھی ضبط کیے جائیں گے۔
سخت گیر موقف رکھنے والے مذہبی رہنما سید احمد خاتمی بھی فہرست میں شامل ہیں جو کہ احتجاج کرنے والوں کے خلاف کارروائی کے لیے حکومت کو ابھارتے رہے ہیں اور ان کو سزائے موت دینے کا مطالبہ کرتے رہے ہیں۔

پنجاب حکومت عمران خان کے لانگ مارچ کا حصہ نہیں بنے گی، وزیر داخلہ پنجاب

Shakira could face 8 years in jail

پاکستان میں صحت عامہ کی صورتحال تباہی کے دہانے پر ہے، عالمی ادارہ صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں