اداریہ : ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ملتان میں بد انتظامی اور کرپشن کا خاتمہ کب ہوگا؟ - Baithak News

اداریہ : ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ملتان میں بد انتظامی اور کرپشن کا خاتمہ کب ہوگا؟

روزنامہ” بیٹھک“ ملتان نیوز کی ایک خبر کے مطابق ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ملتان میں گاڑیاں سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی کے دور میں 14 کروڑ روپے سے خریدی گئیں ۔مشینری مناسب دیکھ بھال اور بروقت مرمت نہ ہونے کے سبب کباڑ میں تبدیل ہوتی جارہی ہے۔کوڑا اٹھانے پر مامور ہیوی گاڑیاں اور ٹرکوں میں غیرمعیاری پرزے لگانے اور اصل پرزوں کو نکالے جانے کے نہ ختم ہونے والے عمل نے کچرا اٹھانے کے عمل کو بری طرح سے متاثر کیا ہے- جبکہ پرائیویٹ ملبہ اٹھانے کی غیرقانونی پریکٹس بھی بڑھتی جارہی ہے۔ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے افسران اور ملازمین پر مبینہ طور پر گاڑیوں، مشینری کے پرزے، ساز و سامان نکال کر بیچ دینے، غیرمعیاری پرزے لگانے، فیول اور موبل آئل میں ملاوٹ کرنے جبکہ آپریشنل کوسٹ، رپیئرنگ کے نام پر بوگس بل بنا کر کروڑوں روپے ہڑپ کرنے کی شکایات بھی عام ہیں ۔ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ملتان کے قیام کے وقت بڑے بلند و بالا دعوے کیے گئے تھے اور کچرے سے بجلی بنانے تک کے دعوے سامنے آئے لیکن یہ کمپنی تو ملتان شہر کو کچرے سے پاک رکھنے کے بنیادی کام کو سرانجام دینے سے بھی قاصر نظر آتی ہے۔ اینٹی کرپشن ملتان کورٹ میں مینجمنٹ کے دس افسران پر 8 کروڑ روپے کی کرپشن کے الزام کے تحت مقدمہ چل رہا ہے۔ جبکہ اس سے پہلے کمپنی میں ڈیلی ویجز کے نام پر بوگس بھرتیوں کا سکینڈل بھی سامنے آیا ہے۔ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں 8 سال میں پندرہ سربراہ بدل چکے ہیں اور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ملتان میں بد انتظامی اور مالی کرپشن ہے کہ ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ۔ محکمہ لوکل گورنمنٹ اینڈ کمیونٹی ڈویلپمنٹ کے ساتھ منسلک خودمختار ادارے کے تحت لاہور ، فیصل آباد، گوجرانوالہ، سیالکوٹ، راولپنڈی،بہاولپور اور ملتان میں الگ الگ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کے لیے کمپنیاں بنائی گئی تھیں اور ان کمپنیوں نے ڈور ٹو ڈور کچرا جمع کرنے، اہم مقامات پر کوڑا جمع کرنے کے کنٹینر نصب کرنے ، گھروں کے اگے دسٹ بن رکھوائے جانے اور چھے دنوں میں کال پہ سروسز فراہم کرنے کا کام کرنا ہوتا ہے۔ ان سات کمپنیوں کی براہ راست نگرانی کی ذمہ داری محکمہ لوکل گورنمنٹ و کمیونٹی ڈویلپمنٹ کے پاس ہے۔ افسوس ناک صورت حال یہ ہے محکمہ لوکل گورنمنٹ جنوبی پنجاب ملتان ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کو اوور سائٹ کرنے کا کام موثر طریفے سے سرانجام دینے سے قاصر ہے۔ ملتان میں اکثر علاقوں میں کچروں کے ڈھیر لگے ہوئے ہیں ۔ غریبوں اور نچلے متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والی آبادی والے علاقوں کی صورت حال انتہائی خراب ہے۔ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کی جانب سے رکھے جانے والے اکثر کنٹینر انتہائی خراب حالت میں ہیں۔کوڑا اٹھانے کی اکثر ہتھ ریڑھیاں مینجمنٹ کے کباڑخانے میں پڑی گل رہی ہیں جبکہ غریب آبادیوں میں گھروں کے آگے ڈسٹ بن بالکل بھی نظر نہیں آرہے۔ کال سروس بھی مثالی نہیں ہے۔ ملتان شہر کے منتخب عوامی نمائندے شہر میں کوڑے کے ڈھیر لگنے اور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کی ناقص کارکردگی بارے نہ تو پریشان نظر آتے ہیں نہ ہی ملتان کے شہریوں نے انہیں پنجاب اسمبلی میں اس صورت حال پرکوئی آواز اٹھاتے دیکھا ہے۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں