اداریہ : کینٹونمنٹ بورڈ سے باہر بھی انسان بستے ہیں - Baithak News

اداریہ : کینٹونمنٹ بورڈ سے باہر بھی انسان بستے ہیں

روزنامہ بیٹھک میں شایع ہونے والی ایک خبر کے مطابق ملتان کے ایک صوبائی حلقہ کا رکن صوبائی اسمبلی وسیم حسن بادوزئی ترقیاتی فنڈز ملتان کینٹ بورڈ کی حدود میں آنے والے پاپوش علاقوں کی سڑکوں کو دوبارہ کارپٹ کرنے پہ لگارہا ہے جبکہ اس کے حلقہ انتخاب میں موجود خداداد کالونی میں سب سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار اور سیوریج سسٹم کی بوسیدہ سیوریج لائنوں کے گندے پانی سے بھری پڑی ہیں – کالونی کے مکینوں کو آنے جانے میں سخت مشکلات کا سامنا ہے – واسا حکام کا موقف ہے کہ اُن کے پاس بوسیدہ لائن ٹھیک کرنے کے لیے فنڈ نہیں ہیں-جبکہ محمکہ ہائی وے کہتا ہے کہ متعلقہ حلقے کے سڑکوں کی تعمیر کے فنڈ کینٹ میں موجود سڑکوں کو کارپٹ کرنے میں خرچ ہورہے ہیں – سوال یہ پیدا ہوتا ہے کینٹ بورڈ کی اپنی جو آمدنی اور ملنے والی صوبائی گرانٹ ہے وہ کہاں خرچ ہورہی ہے؟ کیا ایک حلقہ انتخاب کے پسماندہ اور زیادہ شدید مسائل کا شکار علاقے فنڈز کے پہلے مستحق نہیں بنتے؟

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں