حمل کے دوران کوویڈ ویکسینیشن پیدائش کے بعد بچوں کی حفاظت میں مدد کرتی ہے: امریکی مطالعہ - Baithak News

حمل کے دوران کوویڈ ویکسینیشن پیدائش کے بعد بچوں کی حفاظت میں مدد کرتی ہے: امریکی مطالعہ

امریکی محققین نے منگل کو رپورٹ کیا کہ حاملہ خواتین کو کورونا وائرس کے خلاف ویکسین لگانے سے نوزائیدہ بچوں میں کووڈ-19 کے ہسپتال میں داخل ہونے سے روکنے میں مدد مل سکتی ہے، خاص طور پر اگر حاملہ ماؤں کو ان کے حمل کے بعد گولیاں لگیں۔

نتائج نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ آیا حمل کے دوران ویکسینیشن کے فوائد ان بچوں تک پہنچتے ہیں جو ویکسین حاصل کرنے کے لیے بہت کم عمر ہوں گے۔

کئی پیڈیاٹرک ہسپتالوں اور یو ایس سینٹرز فار ڈیزیز کنٹرول اینڈ پریوینشن (CDC) کے محققین نے جولائی 2021 اور جنوری 2022 کے درمیان چھ ماہ سے کم عمر کے بچوں کو دیکھا۔

اس تحقیق میں ہسپتال میں داخل 379 شیر خوار بچوں کے ڈیٹا کا تجزیہ کیا گیا – 176 کوویڈ 19 کے ساتھ اور 203 جنہیں دیگر مسائل کی وجہ سے داخل کیا گیا تھا۔ اس نے پایا کہ CoVID-19 کی ویکسین ان بچوں میں ہسپتال میں داخل ہونے سے روکنے کے لیے مجموعی طور پر 61 فیصد مؤثر ہیں جن کی ماؤں کو حمل کے دوران ٹیکے لگائے گئے تھے۔

یہ تحفظ 80% تک بڑھ گیا جب ماؤں کو پیدائش سے 21 ہفتوں سے 14 دن پہلے ٹیکے لگائے گئے۔ جن بچوں کی ماؤں کو پہلے حمل کے دوران ٹیکہ لگایا گیا تھا ان کے لیے ویکسینیشن کی تاثیر 32 فیصد تک گر گئی۔

مطالعہ کے مصنفین نے متنبہ کیا کہ حمل کے شروع میں تاثیر کے تخمینے کو نمونے کے چھوٹے سائز کی وجہ سے احتیاط کے ساتھ سمجھا جانا چاہئے۔

“ابھی ہم اس بات کو یقینی بنانا چاہتے ہیں کہ ہم ماں اور نوزائیدہ دونوں کی حفاظت کر رہے ہیں،” سی ڈی سی کی ڈانا مینی ڈیلمین نے صحافیوں کو بتایا۔ “لہذا جیسے ہی کوئی حاملہ خاتون ٹیکہ لگانے کے لیے تیار ہو، اسے آگے بڑھ کر ایسا کرنا چاہیے۔”

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں