رجسٹری برانچ کرپشن کی یونیورسٹی بن گئی سب نۓ رجسٹرار بھی کرپشن فیکلٹی منے شامل - Baithak News

رجسٹری برانچ کرپشن کی یونیورسٹی بن گئی سب نۓ رجسٹرار بھی کرپشن فیکلٹی منے شامل

ملتان(ملک اعظم سے)رجسٹری برانچ ملتان میں چہرے بدلنے کے باوجود کروڑوں کی کی کرپشن اور ٹیکس غبن کا سلسلہ نہ رک سکا۔سب رجسٹرارکی تبدیلی کے باجودکرپٹ کلرکوں نے وثیقہ نویسوں کےساتھ ملکر نئے سب رجسٹراروں کو بھی نت نئے طریقے سکھادئیے۔سب رجسٹرار سٹی صاحبزادہ ظفر مہاروی نے لوٹ مار کیلئے کارپوریشن نقشہ منظوری مشروط قرار دی جو وثیقہ نویس پہلے جعلی سٹمپ پیپرز ، کارپوریشن اور ایف بی آر کی جعلی رسید تیار کرکے لوٹ مار کررہے تھے اب انھوں نے نقشہ منظوری کا جعلی این او سی بھی تیار کرنا شروع کر دیا ہے۔ ملتان شہر کی حدود میں اہل کمیشن کےلئے 30سے50ہزار روپے رشوت کا ریٹ مقرر ہے۔صاحبزادہ ظفر مہاروی نے ڈپٹی کمشنر آفس کے اہلکاروں کو اپنی کوٹھی پر بھی تعینات کر رکھا ہے معلوم ہوا ندیم شاہ نامی اہلکار رجسڑی برانچ میں تعینات نہ ہونے کے باوجود سب رجسٹرار کی آشیر باد سے سٹی برانچ میں لوٹ مار میں مصروف رہا۔ندیم شاہ اراضی مالکان کو غیر قانونی اعتراض اٹھا کر زچ کر دیتا ہے کئی کئی ماہ تک رجسڑی کلئیر ہی نہیں کرتا تھا جس پر ملتان کے ایک شہری نے کھلی کچہری میں صاحبزادہ ظفر مہاری کی موجودگی میں ڈپٹی کمشنر کو ندیم شاہ کی لوٹ مار کی درخواست دی لیکن ڈپٹی کمشنر آفس نے سرے سے اس درخواست پر کاروائی ہی نہ ہونے دی جس پر شہریوں نے احتجاج کیا تو صاحبزادہ ظفر مہاروی نے ندیم شاہ کومنظر عام سے ہٹا کر اپنی کوٹھی پر بٹھا دیا۔بتایاجاتاہے دن بھرسب رجسٹرارسٹی اپنے آفس میں سائلین کے بیان قلمبندکرتاہے شام کوتمام رجسٹریاں صاحبزادہ ظفر مہاروی کے گھرپہنچا دی جاتی ہیں جن کی ندیم شاہ نامی کلرک سکرونٹی کرتا ہے۔معلوم ہوا صاحبزادہ کی تعیناتی کے بعد رجسڑی برانچ سٹی میں ٹیکس غبن والی ہزاروں رجسٹریوں کا ریکارڈ ہی غائب ہے جبکہ جعلی ٹیکس رسید والی رجسٹریاں سر ے سے موجود ہی نہیں ،معلوم ہوا سب رجسٹرار سٹی کا اہل کمیشن رجسڑ زبیر بھٹہ نامی وثیقہ نویس کے پاس ہے جو صاحبزادہ ظفر مہاروی کے فرنٹ مین کے طور پر مشہور ہے اس حوالے سے جب بھی کوئی شہری سب رجسٹرار سٹی سے شکایت کی کرتا ہے تو وہ ہنس کر ٹال دیتے ہیں، اہل کمیشن وثیقہ نویس زبیر بھٹہ کے پاس ہوتا ہے اس اہل کمشن رجسڑ کا ریکارڈ کسی کے حوالے ہی نہیں کیا جاتا سابق سب رجسٹراروں کی طرح یہ رجسڑ بھی آفس نہیں رکھا جاتا ۔اس اہل کمشن کے ذریعے سائلین کو بلیک میل کرکے منہ مانگی رشوت لیکر انڈر ویلو رجسٹریاں کی جاتی ہیں۔بتایا گیا ہے صرف ملتان شہر کی حدود میں اہل کمیشن کےلئے 30سے50ہزار روپے رشوت وصول کی جا رہی ہے۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں