سائنس اور ٹیکنالوجی کی وزارت نے 14,217 کروڑ روپے مختص کیے ہیں۔ - Baithak News

سائنس اور ٹیکنالوجی کی وزارت نے 14,217 کروڑ روپے مختص کیے ہیں۔

سائنس اور ٹیکنالوجی کی وزارت کو مرکزی بجٹ 2022-23 میں 14,217 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں، جو گزشتہ مالی سال سے 3.9 فیصد کم ہے۔

وزارت کے پاس تین شعبے ہیں سائنس اور ٹیکنالوجی کا محکمہ (DST)، بایو ٹیکنالوجی کا شعبہ اور سائنسی اور صنعتی تحقیق کا شعبہ (DSIR)۔

سائنس اور ٹکنالوجی کے محکمہ کو 6,000 کروڑ روپے، بایو ٹکنالوجی کے محکمے کو 2,581 کروڑ روپے اور سائنسی اور صنعتی تحقیق کے محکمے کو 5,636 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔

ان تمام محکموں نے ملک میں COVID-19 وبائی امراض کا مقابلہ کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

محکمہ سائنس اور ٹیکنالوجی کے تحت مرکزی سیکٹر اسکیموں کو 2,894 کروڑ روپے مختص کیے گئے تھے، جو 2021-22 میں 2,915 کروڑ روپے سے کم ہے۔

اسی وقت، بایو ٹکنالوجی کے محکمے کے تحت مرکزی شعبے کی اسکیموں کے لیے 1,680 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں، جو 2021-22 میں 2,620 کروڑ روپے سے کم ہے۔

نیز، سائنسی اور صنعتی تحقیق کے محکمے کے تحت مرکزی سیکٹر اسکیموں کے لیے 39 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں، جو کہ 2021-22 میں 35 کروڑ روپے سے زیادہ ہے۔ سائنسی اور صنعتی تحقیق کی کونسل کو 5,562 کروڑ روپے دیے گئے ہیں۔

مجموعی طور پر، بجٹ مختص میں 2021-22 سے 3.89 فیصد کمی 2021-22 سے دیکھی گئی ہے جب 14,793 کروڑ روپے مختص کیے گئے تھے۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں