طورخم تجارت بدستور معطل ہے۔ - Baithak News

طورخم تجارت بدستور معطل ہے۔

خیبر: طورخم بارڈر کے ذریعے افغانستان کے ساتھ تجارت پیر کو دوسرے روز بھی معطل رہی کیونکہ احتجاج کرنے والے خوگا خیل قبائل اور مقامی انتظامیہ ایک بزرگ کی رہائی اور بارڈر کراسنگ کی طرف جانے والی مرکزی سڑک کو دوبارہ کھولنے کے بارے میں کسی معاہدے پر پہنچنے میں ناکام رہے۔

خوگا خیل کے عمائدین کی ایک ٹیم نے اسسٹنٹ کمشنر، لنڈی کوتل، اکبر افتخار کے ساتھ خوگا خیل کے ایک بزرگ مفتی اعجاز کی رہائی کو محفوظ بنانے اور سڑک کی ناکہ بندی ہٹانے میں مدد کے لیے ایک سلسلہ وار بات چیت کی۔

ذرائع نے بتایا کہ انتظامیہ چاہتی تھی کہ بزرگ کی رہائی کے بدلے میں احتجاج کرنے اور سڑک بلاک کرنے سے گریز کے بارے میں پختہ ضمانتیں دیں، جنہیں ہفتہ کی شام جمرود میں تھری ایم پی او کے تحت گرفتار کیا گیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ خوگا خیل کے مذاکرات کاروں نے اپنے ساتھی قبائلیوں کو ایجی ٹیشن سے روکنے کے بارے میں ضمانتیں فراہم کرنے کی ذمہ داری نبھانے میں اپنی نااہلی کا اظہار کیا۔

مذاکرات ناکام ہونے پر خوگا خیل کے قبائلیوں نے مرکزی سڑک کی ناکہ بندی جاری رکھی اور افغانستان کے ساتھ تجارت کو روک دیا۔

ذرائع نے یہ بھی کہا کہ انتظامیہ اب مظاہرین کو سڑک سے ہٹانے پر غور کر رہی ہے.

باغ مرکز تیراہ میں پولیس کا کہنا ہے کہ آگ جھنڈا سینا کے علاقے میں پاور جنریٹر کی وجہ سے لگی جس سے مرکز کا تمام ریکارڈ جل گیا اور عمارت کو بھی نقصان پہنچا۔ بعد ازاں فائر ٹینڈرز نے آگ پر قابو پالیا۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں