محسن بیگ کی شریک حیات نے دہشت گردی کا مقدمہ IHC میں چیلنج کر دیا۔ - Baithak News

محسن بیگ کی شریک حیات نے دہشت گردی کا مقدمہ IHC میں چیلنج کر دیا۔

میڈیا شخصیت محسن بیگ کی اہلیہ نے جمعرات کو اپنے خلاف دہشت گردی کے مقدمے کو اسلام آباد ہائی کورٹ (IHC) میں چیلنج کر دیا۔

ان کی اہلیہ نے دہشت گردی کا مقدمہ خارج کرنے کی درخواست میں موقف اختیار کیا کہ پولیس نے ان کے خلاف تھانہ مارگلہ میں جھوٹا اور بے بنیاد مقدمہ درج کیا ہے اور عدالت پولیس کو مقدمہ خارج کرنے کا حکم دے۔

ایک روز قبل وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے بیگ کو وزیر مواصلات مراد سعید پر تنقید کرنے پر صبح پولیس کی ایک بڑی نفری کے گھر پر چھاپہ مارنے کے بعد گرفتار کیا تھا۔

ایف آئی اے نے سعید کی درخواست پر بیگ کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا، جب سابق نے نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام کے دوران سعید کے خلاف غیر اخلاقی اور تضحیک آمیز تبصرہ کیا تھا۔ پینلسٹ مراد کی وزارت کو حال ہی میں وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے اعلیٰ کارکردگی کا ایوارڈ ملنے پر تبادلہ خیال کر رہے تھے۔

پروگرام کو حکومتی حلقوں کی جانب سے شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا، اور میڈیا ریگولیٹر کی جانب سے چینل کو وجہ بتاؤ نوٹس بھی جاری کیا گیا۔

ایف آئی اے حکام کا کہنا تھا کہ چھاپے کے دوران بیگ، ان کے بیٹوں اور نوکروں نے ایف آئی اے ٹیم پر سیدھی فائرنگ کی اور دو اہلکاروں کو یرغمال بنا کر تشدد کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ بیگ نے اپنے بیٹوں اور نوکروں کے ساتھ سرکاری ملازمین پر گولی چلا کر جرم کیا۔

حکام نے مزید کہا کہ بیگ کو مارگلہ تھانے لے جایا گیا جہاں اسلام آباد پولیس مزید کارروائی کر رہی ہے۔ بیگ کے بیٹے کو بھی اس کے خلاف مارگلہ تھانے میں درج مقدمے میں نامزد کیا گیا تھا۔

ایف آئی اے نے کہا کہ بیگ کے خلاف الیکٹرانک جرائم کی روک تھام ایکٹ کی دفعہ 20 (قدرتی شخص کے وقار کے خلاف جرائم)، 21-D (شخص اور نابالغ کی عزت کے خلاف جرائم) اور 24 (سائبر اسٹالنگ) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ 2016 کو پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 500 (فوجی افسران کو بدنام کرنا) اور 555 (عوامی فساد کو ہوا دینے والا بیان) کے ساتھ پڑھا گیا۔

بیگ کے ترجمان نے کہا کہ ایف آئی اے کے پاس ان کی گرفتاری کا کوئی وارنٹ نہیں تھا اور نہ ہی ان کے خلاف کوئی مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ ترجمان کے مطابق آپریشن کے دوران بیگ کو مارا پیٹا گیا جبکہ ان کے اہل خانہ کو ہراساں کیا گیا۔

ابتدائی طور پر ایف آئی اے کی جانب سے کوئی بیان سامنے نہیں آیا۔ تاہم، ایجنسی نے دوپہر کو بتایا کہ اس کے سائبر کرائم ونگ لاہور نے وفاقی وزیر مراد سعید کی درخواست پر بیگ کے خلاف مقدمہ درج کیا اور عدالت سے وارنٹ حاصل کرنے کے بعد F-8 میں بیگ کے گھر پر چھاپہ مارا۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں