ملتان ٹیسٹ نااہلی کی نذر - Baithak News

ملتان ٹیسٹ نااہلی کی نذر

ملتان کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلے جانیوالے پاکستان بمقابلہ انگلینڈ کی ٹیسٹ میچز سیریز کا دوسرا ٹیسٹ میچ پی سی بی اور آنلائین ٹکٹس بُکنگ ایپ بُک می کی نااہلی کی نذر ہوگیا۔

پی سی بی اور آنلائن ٹکٹ بکنگ ایپ بُک می کی نااہلی اور بد انتظامی کی بدولت ملتان کرکٹ سٹیڈیم میں جنوبی پنجاب بھر سے میچ دیکھنے کے لیے آنے والے شائقین کرکٹ آن لائن ٹکٹ موجود ہونے کے باوجود میچ دیکھے بغیر گھروں کو واپس چلے جانے پر مجبور ہوگئے۔ بک می اور پی سی بی نے آن لائن ٹکٹوں کو سکین کرنے کے نام پر ہزاروں شائقین کرکٹ کو گھنٹوں لائن میں کھڑا ہونے پر مجبور کر دیا.بک می اور پی سی بی کی نااہلیت دیکھے ہزاروں شائقین کے لئے صرف ایک گاڑی ٹکٹ اسکین کرنے کیلئے موجود تھی.جہاں پر صبح گیارہ بجے سے ہی آنلائن ٹکٹس کو سکین کرکے دئیے جانیوالے پاس ختم ہوگئے وقار یونس انکلثور جس کی ٹکٹ پانچ ہزار روپے تھی وہ بھی آنلائن پرنٹ والی ٹکٹس پاس ہونے کے باوجود شائقین کرکٹ کو اسکین کرکے پاس نہ دئیے گئے۔بک می اور پی سی بی شائقین کرکٹ کے کروڑوں روپے ہضم کرگیا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ کو اس صورتحال پر سختی سے نوٹس لینا چاہئے اور شائقین کرکٹ کو ان کے ٹکٹوں کے پیسے واپس کرنے چاہیے۔ٹکٹ بکنگ ایپ بک می کی گاڑی میں موجود عملہ کبھی جنریٹر میں پٹرول ختم ہونے کی وجہ سے شائقین کرکٹ کو ذلیل و خوار کرتا رہا اور کبھی مختلف انکلوژر کے ٹکٹ پاس ختم ہونے کی بنیاد پر گھنٹوں لمبی لائنوں میں کھڑے ہونے پر مجبور کرتا رہا۔اس دوران پارکنگ ایریا میں نہ ہی پینے کا پانی موجود تھا اور نہ ہی شائقین کرکٹ کے بیٹھنے کیلئے سایہ دار جگہ کا انتظام کیا گیا تھا۔یہ جنوبی پنجاب اور بلخصوص اہلیان ملتان کی کرکٹ سے محبت ہے کہ وہ جس دن سے دونوں ٹیمیں ملتان پہنچی ہے بدترین ازیت میں مبتلا ہونے کے باوجود میچ دیکھنے جوق در جوق ہزاروں کی تعداد میں سٹیڈیم گئے لیکن وہاں پر بھی پیسے خرچ کرنے کے باوجود بک می کی اناہلی کی بدولت 90 فیصد شائقین کرکٹ میچ دیکھے بغیر گھروں کو لوٹ گئے۔بچے خواتین کی بڑی تعداد پریشانی کی حالت میں پیسے خرچ کرکے ٹکٹس حاصل کرنے کے باوجود گھروں کو لوٹ جانے پر مجبور ہوگیے.چیرمین پی سی بی رمیز راجہ اور بک می کے چیرمین کو چاہئے کہ اس صورتحال کا فوری نوٹس لیں شائقین کرکٹ کو ان کی ٹکٹس کے پیسے واپس کیے جائیں اور گھنٹوں تک لائنوں میں ذلیل و خوار کرنے پر معافی مانگی جائے۔ مستقبل میں ایسی صورتحال سے شائقین کرکٹ کو بچایا جائے اگر آنلائین ٹکٹس فروخت کرنے ہیں تو پھر ماضی کی طرح سٹیڈیم کے اندر داخلہ کے وقت ٹکٹوں کو اسکین کیا جائے۔ملتان ٹیسٹ میچ پہلے دن آغاز سے ہی اپنے رنگ بدل رہا ہے کبھی پاکستان کا پلڑا بھاری ہوتا ہے تو کبھی میچ کا پانسہ انگلینڈ کے حق میں بدلتا دیکھائی دیتا ہے۔جب یہ کالم لکھا جارہا تھا پاکستان کرکٹ ٹیم اپنی دوسری اننگ کی بیٹنگ کررہی ہے۔ اب ایک نظر ماضی میں ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والے ٹیسٹ میچز پر ڈالتے ہے۔ اگست 2001 سے نومبر 2006 کے دوران ملتان کرکٹ سٹیڈیم نے پانچ ٹیسٹ میچز کی میزبانی کی جس میں نتیجہ خیز رہنے والے چار میں سے تین میچز میں پاکستان نے کامیابی حاصل کی، پاکستان نے ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں انگلینڈ کو ایک اور بنگلہ دیش کو دو مرتبہ ٹیسٹ میچ میں شکست دی ہے۔ بھارت نے اس وینیو پر کھیلے گئے اپنے واحد ٹیسٹ میں کامیابی حاصل کی تھی جبکہ پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے مابین کھیلا گیا ٹیسٹ میچ ڈرا ہوا تھا۔ پاکستان کے موجودہ بیٹنگ کوچ اور سابق بیٹر محمد یوسف 517 ٹیسٹ رنز بناکر ملتان کرکٹ سٹیڈیم کے بیٹنگ چارٹ میں سرفہرست ہیں، وہ اس وینیو پر تین سنچریاں بنانے والے واحد بیٹر بھی ہیں۔ بھارت کے وریندر سہواگ اور ویسٹ انڈیز کے برائن لارا نے ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں بالترتیب ٹرپل اور ڈبل سنچریاں اسکور کر رکھی ہیں۔ پاکستان کے سپن بالر دانش کنیریا اس گراؤنڈ میں کھیلی گئی 5 ٹیسٹ اننگز میں 22 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں۔ ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں 35 ہزار تماشائیوں کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔ یہ اسٹیڈیم وہاڑی روڈ پر واقع ہے، فروری 2020 میں اس وینیو نے ایچ بی ایل پی ایس ایل کے تین میچز کی میزبانی کی تھی۔جہاں میزبان ملتان سلطانز نے تینوں میچز میں پشاور زلمی، کراچی کنگز اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست سے دوچار کیا تھا۔امید کرتا ہوں ملتان کرکٹ سٹیڈیم مستقبل میں بھی پاکستان سپر لیگ،ایشیا کپ اور دیگر انٹرنیشنل میچز کی سیریز کی میزبانی کرے گا۔پاکستان کرکٹ بورڈ کا شائقین کرکٹ کے لیے مستقبل میں بہترین انتظامات کرے گا۔

پنجاب حکومت عمران خان کے لانگ مارچ کا حصہ نہیں بنے گی، وزیر داخلہ پنجاب

Shakira could face 8 years in jail

پاکستان میں صحت عامہ کی صورتحال تباہی کے دہانے پر ہے، عالمی ادارہ صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں