میونسپل کمیٹی میاں چنوں کی ملکیت دکانوں کا کرایہ کون کھارہا ہے؟ - Baithak News

میونسپل کمیٹی میاں چنوں کی ملکیت دکانوں کا کرایہ کون کھارہا ہے؟

ضلع خانیوال کی تحصیل میاں چنوں کی میونسپل کمیٹی میاں چنوں کی اربوں روپے کی ملکیت 700 دکانوں کے کرائے کی مد میں ایک روپیہ بھی سرکاری حزانے میں جمع نہیں ہوا ہے۔ روزنامہ” بیٹھک“ میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق میونسپل کمیٹی میاں چنوں کی ٹیکس اینڈ انفراسٹرکچر برانچ کے دستیاب ریکارڈ کے مطابق گزشتہ تین سالوں میں بلدیہ کی ملکیت 753 دکانوں کے کرائے کی مد میں ایک بھی رسید ریکارڈ میں موجود نہیں ہے اور نہ ہی دکانوں کے کرائے کی مد میں برانچ کے رجسٹر میں کوئی آمدنی درج ہے۔ جبکہ ریکولیشن برانچ میں موجود میونسپل کمیٹی کی منقولہ و غیرمنقولہ جائیداد کے ریکارڈ رجسٹرڈ کے مطابق میونسپل کمیٹی میاں چنوں کی ملکیت میں 602 دکانیں اور 150 تہہ بازاری ٹھیلے ہیں ۔ ان دکانوں کا گزشتہ تین سال میں کل کرایہ پانچ کروڑ بنتا ہے۔ میونسپل کمیٹی کی ملکیت دکانوں کے کرائے داران کی اکثریت کا کہنا ہے کہ وہ باقاعدگی سے ہر ماہ کرایہ ادا کرتے ہیں اور کرائے کی رسید کی پرچی کٹواتے ہیں۔تین سال میں پانچ ارب روپے کا سرکاری حزانے کو نقصان پہنچا ہے لیکن اگر اس حوالے سے گزشتہ 21 سالوں کے ریکارڈ کی جانچ پڑتال کی جائے گی تو واجب الادا رقم 35 کروڑ روپے تک پہنچ جائے گی ۔ اگر بلدیہ کی سالانہ آڈٹ رپورٹ میں اس بے ضابطگی کا ذکر آیا تو آج تک اس پر محکمانہ انکوائری کرکے نقصان کے ذمہ داروں سے سرکاری خزانے کا نقصان پورا کیوں نہ کرایا گیا اور ان کے خلاف اینٹی کرپشن کو مقدمات کے اندراج کی سفارش کیوں نہیں کی گئی؟ڈسٹرکٹ اکاو¿نٹس کمیٹی جس کا سربراہ ڈپٹی کمشنر ہوتا ہے، یہ انتہائی سنگین مالیاتی بے ضابطگی کا سکینڈل ہے جس کی جانچ کےلئے سیکرٹری لوکل گورنمنٹ و کمیونٹی ڈویلپمنٹ جنوبی پنجاب کو فی الفور اعلی سطحی انکوائری قائم کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں