وفاقی حکومت کا ہزاروں ملازمین کو بے روزگار کرنے کے ایک اور منصوبہ کا انکشاف. - Baithak News

وفاقی حکومت کا ہزاروں ملازمین کو بے روزگار کرنے کے ایک اور منصوبہ کا انکشاف.

ملتان (ملک اعظم سے) وفاقی حکومت کا پاکستان سنٹرل کاٹن ریسرچ اتھارٹی ختم کرنے کے منصوبے کا انکشاف ہؤا ہے سنڑل کاٹن ریسرچ سنٹر ختم کرنے کے لیے پاکستان کاٹن اتھارٹی کے نام سے نیا ادارہ متعارف کرانے کے بعد ہزاروں ملازمین کو بے روزگار کرنے کا پیپر ورک وزیر اعظم کو پیش کر دیا ہےنئی کاٹن اتھارٹی کے قیام سے سینکڑوں پی سی سی سی ملازمین فارغ کر نے کا منصوبہ تیاروزیر اعظم پاکستان عمران خان کی زیر صدارت وزیر اعظم ہاؤس میں پیر کو ہونے والے اجلاس میں پاکستان کاٹن ڈیویلپمنٹ اتھا رٹی قائم کرنے کی منظوری دی گئی جس کے نتیجے میں پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کے سینکڑوں ملازمین کو ملازمت سے فارغ کرنے کا منصوبہ بنایا جاچکا ہے۔ باخبر ذرائع کے مطابق وزیر اعظم کے علم میں لائے بغیر غیر منتخب مشیران اور اعلی آفیسران کی ملی بھگت سے 1948سے قائم شدہ پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کو ختم کرکے اب ایک نئی کاٹن اتھارٹی بنائی جا رہی ہے جس کا مقصد بظاہر کاٹن ریسرچ اینڈ ڈیویلپمنٹ میں جدت لانا ہے جبکہ درحقیقت وزیر اعظم کے اردگرد موجود مافیا کاٹن سیس کی مد میں آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسو سی ایشنز کے ذمہ کئی سالوں سے پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کے واجب الادا اربوں روپے ہڑپ کرنے کا منصوبہ بنائے بیٹھا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نئی کاٹن اتھارٹی کے قیام سے نہ صرف ملک بھر کے پی سی سی سی کے حاضر سروس بے روزگار ہوجائیں گے بلکہ سینکڑوں بوڑھے خواتین ومرد ریٹائرڈملازمین اپنی پینشنز سے بھی ہاتھ دھو بیٹھے گے۔ اس خبر کے سامنے آجانے پر ملک بھر کے پی سی سی سی کے ملازمین اور پینشنرز میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور انہوں وزیر اعظم عمران خان سے دردمندانہ اپیل کی ہے کہ وہ ملازمین دشمن خفیہ عناصر کی تحقیقات کرائیں اور کوئی بھی ایسا اقدام نہ اٹھائیں جس سے پی سی سی سی ملازمین بیروزگار ہوجائیں۔ اس خبر کے آنے سے آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹ ملتان یونٹ کے صدر تنویر عباس کی زیر صدارت سی سی آر آئی میں ایک ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا جس میں ملازمین دشمن حکومتی اقدامات کے خلاف شدید غم وغصہ کا اظہار کیا گیا اور ا یپکا یونٹ سی سی آر آئی ملتان نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور وفاقی وزیر برائے نیشنل فوڈ سیکیورٹی سید فخر امام سے اپیل کی ہے کہ وہ پی سی سی سی ملازمین کا تحفظ کریں اور ان کے بنیادی حقوق کا خیال رکھا جائے بصورت دیگر ملک بھر کے تمام پی سی سی سی کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹس اور دیگر مراکز کے تمام ملازمین دھرنہ دیں گے اور اپنے بنیادی حقوق کے حصول کے لئے انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور ہوں گے۔ سی سی آر آئی ملتان ایپکا یونٹ کے صدر تنویر عباس کا کہنا تھا کہ اگر چند دن میں حکومت نے ملازمین دشمن فیصلہ واپس نہ کیا تو پہلے مرحلہ میں سی سی آرئی کے سینکڑوں ملازمین و پینشنرزوفاقی وزیر برائے نیشنل فوڈ سیکیورٹی سید فخر امام کی ملتان میں واقع ان کی رہائش گاہ پر دھرنہ دیں گے۔ اور اگر حکومت نے اپنا فیصلہ واپس نہ لیا تواگلا لائحہ عمل تیار کیا جائے گا۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں