کرپشن نا قابل برداشت ٤٥٠ سرکاری ملازمین بر طرف کیے جا چکے - Baithak News

کرپشن نا قابل برداشت ٤٥٠ سرکاری ملازمین بر طرف کیے جا چکے

لیہ(بیٹھک رپورٹ) سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو / ریلیف کمشنر پنجاب بابر حیات تارڑ ایک روزہ دورہ پر ڈی سی آفس لیہ پہنچ گئے ۔لیہ آمد پر پولیس کے چاق وچوبند دستے نے سلامی پیش کی۔ ڈپٹی کمشنر شہباز حسین اور اے ڈی سی آر اشفاق حسین سیال نے ڈی سی آفس پہنچنے پر استقبال کیا۔صوبائی پارلیمانی سیکرٹری مواصلات شہاب الدین خان سیہڑ،اسسٹنٹ کمشنرزسٹی شزارحمان ،اویس مانگٹ موجو دتھے ۔ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو بابر حیات تارڑ نے ڈی سی کمپلیکس کے لان میں شجر کاری مہم کے سلسلہ میں باٹل پام کا پودا لگایا۔ ایس ایم بی آر / ریلیف کمشنر پنجاب بابر حیات تارڑ نے ضلعی ہنگامی آپریشن سنٹر کا بھی افتتاح کیا۔انہوں نے کہاکہ حکومت پنجاب تمام اضلاع میں جدید ٹیکنالوجی سے لیس ہنگامی آپریشن سنٹر قائم کر رہی ہے اب کسی ایونٹ کے لئے علیحدہ مانیٹرنگ روم قائم نہیں ہوگا۔ ضلعی ہنگامی آپریشن سنٹر سارا سال 7/24 کام کرے گا۔تمام محکمے ایونٹ، ممکنہ قدرتی آفت یا ہنگامی حالت کے پیش نظر سنٹر میں اپنی خدمات انجام دیں گے۔ تمام دیہی مرکز مال رپورٹنگ سنٹر کے طور پر بھی خدمات انجام دیں گے۔ دیہی مراکز مال ضلعی ہنگامی آپریشن سنٹر کو رپورٹ کریں گے۔ ہنگامی آپریشن سنٹر کی بدولت ریسکیو، ریلیف، احکامات اور انتظامات میں آسانی رہے گی۔وزیر اعلیٰ عثمان خان بزدار کے ویژن کے مطابق 8 ہزار دیہی مراکز مال قائم کئے جا رہے ہیںجبکہ پنجاب میں 5 ہزار دیہی مرکز مال فعال ہو چکے ہیں۔اس موقع پر رہنما پی ٹی آئی بشارت رندھاوا، عثمان اولکھ، عون تنگوانی، صدر بار غضنفر عباس بھی موجود تھے۔ علاوہ ازیں انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں کرپشن پرکسی قسم کو ئی سمجھوتہ نہیں کیاجائے گا۔احتسابی عمل کو فعال بناتے ہوئے 450افسران واہلکاران کو مختلف الزاما ت ثابت ہونے پر برطرف کیاجا چکا ہے جو پنجاب حکومت کے فوری سماجی انصاف فراہمی کے ویژن کی تکمیل کی جانب عملی قدم ہے ۔ آئندہ5 ہفتو ں میں سرکاری اراضی قابضین سے واگزار کرانے کےلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے جارہے ہیںجس کے تحت واگزار کرائی جانیوالی اراضی کے تمام اخراجات بشمول عمارتیں گرانے کا خرچ قابضین سے وصول کیاجائے گااور قابضین پر یومیہ بنیادوںپرجرمانے وصول کیے جا ئیں گے تاکہ لینڈمافیا کے حوصلے پست کرتے ہوئے انہیں قانون کے دائرے میں لا کر حکومتی رٹ قائم کی جاسکے جبکہ حکومت پنجاب نے 480 ارب مالیت کا 1 لاکھ 79 ہزار ایکڑ رقبہ قابضین سے واگزار کیا ہے۔ دریں اثناء سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو بابر حیات تارڑ سے نئے بھرتی ہونےوالے پٹواریوں نے ڈی سی آفس کے کمیٹی روم میں ملاقات کی۔ ڈپٹی کمشنر شہباز حسین، اے ڈی سی آر اشفاق حسین سیال اور اسسٹنٹ کمشنر شزارحمن بھی اس موقع پر موجود تھیں۔ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو بابر حیات تارڑ نے پٹواریوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلیٰ عثمان خان بزدار کی خصوصی ہدایت پر پٹواریوں کی بھرتی شفاف انداز میں میرٹ پر کی گئی ہے۔ پٹواریوں کو مزید با اختیار بنانے اور نمبرداری نظام کو پھر سے فعال کرنے کےلئے اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ پٹواریوں کو آسان اقساط پر موٹر سائیکل فراہم کرنے کے علاوہ موبائل فون بھی فراہم کرنے کی تجاویز زیر غور ہیں۔ دیہی مرکز مال کےلئے پٹواریوں کو ٹریننگ کا سلسلہ جاری رہے گا اور پٹواری چار اقسام کے روزنامچہ لکھنے کا پابند ہوگا۔ پٹوار سرکل میں پیش آنےوالے واقعات روزنامچہ کی صورت میں نہ صرف ریکارڈ کا حصہ ہوں گے بلکہ متعلقہ محکمہ کو آن لائن رپورٹ بھی پہنچے گی جس سے گورننس میں بہتری آئے گی۔دیہی مرکز مال پاکستان کا سب سے بہترین مربوط اور جامع سسٹم ہے جس کے دور رس نتائج برآمد ہوں گے۔اس موقع پر پٹواریو ں کی کثیرتعداد موجود تھی۔ مزید برآں سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب بابر حیات تارڑ نے کہاہے کہ وزیراعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ عثما ن خان بزدار کے ویژن اور مکمل سرپرستی میں پاکستان کی تاریخ پہلے مربوط اور جامع پروگرام کے تحت دیہی مرکز مال کا آغاز کردیاگیا ہے عوام کو فرد ملکیت ، آن لائن انتقالات،روزنامچہ کے علاوہ،ڈیتھ سرٹیفکیٹ،نکاح اور ریونیوسے متعلقہ اور روز مرہ دیگر آن لائن سہولیات و ریکارڈ میسر ہوگا۔ریونیوجوڈیشل مقدمات کی دائرگی ،پیشی او ر شنوائی کا عمل بھی ان لائن کردیاگیا ہے ۔کاز لسٹ کا اجرااورپیشی کی اطلاع میسج کے ذریعے دی جائے گی جبکہ مقدمے کا فیصلہ 6ماہ کے اندر کیاجانا ضروری ہوگا ۔انہوں نے یہ بات ریونیو افسران کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر محمدشہبا زحسین ،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیواشفاق حسین سیال،اسسٹنٹ کمشنرز شزارحمان ،اویس مانگٹ اور متعلقہ افسران موجود تھے۔انہوں نے کہاکہ آٹھ ماہ کی قلیل مدت میں ایک لاکھ 23 ہزار کیسز کی سماعت کرتے ہوئے زیر التوا کیسز 62 ہزار سے کم تک لے آئے ہیں جسے مزید کم کیا جائیگا۔ای سٹیمپ پیپر کے اجراسے مصنوعی قلت کا خاتمہ کردیا گیا ہے۔ ریونیو ریکارڈ کی 15مارچ تک سکیننگ اور اپریل تک اپ لوڈ کردیاجائےگا۔ ڈپٹی کمشنر آفس میں خالی اورنئی اسامیوں پر بھرتی کےلئے سفارشات تیار کی کی جائیں۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر شہبا ز حسین نے ضلع لیہ کی جمعبندیوں کی تکمیل اور دیگر معاملات بارے بریفنگ دی۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں