کند سیکر ٹر یٹ فیتہ نہ کا ٹ سکا - Baithak News

کند سیکر ٹر یٹ فیتہ نہ کا ٹ سکا

ملتان (ارشد ملک)جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ، انتظامی حوالے سے مکمل طور پر با اختیار نہ بن سکا، حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے مکمل اختیارات تا حال تخت لاہور کے پاس، نیا پاکستان قومی صحت کارڈ کا افتتاح جنوبی پنجاب کے سیکرٹری کی بجائے لاہور سے آئے ہوئے صوبائی سیکرٹری صحت پنجاب نے کیا، علیحدہ صوبہ یا رولز آف بزنس میں ترمیم کئے بغیرجنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو با اختیار بنانے کاحکومتی دعویٰ مذاق بن کر رہ گیا۔ تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال ملتان میں نیا پاکستان قومی صحت کارڈ کا باقاعدہ اجرا کر دیا گیا ہے۔ سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن ڈاکٹر احمد جاوید قاضی نے گزشتہ شب اس کا افتتاح کیا۔ کمشنر ملتان ڈویژن ڈاکٹر ارشاد احمد، سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن ساتھ پنجاب نادر چٹھہ، وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر رانا الطاف احمد، پرنسپل نشتر میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر افتخار حسین، ایم ایس نشتر ہسپتال ڈاکٹر امجد چانڈیو سمیت دیگر انتظامی افسران کی موجودگی میں سیکرٹری ہیلتھ احمد جاوید قاضی نے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر رانا الطاف احمد کے ہمراہ نشتر آٹ ڈور میں قائم کردہ کانٹرز کا دورہ کیا اور اس ضمن میں نشتر انتظامیہ کی جانب سے کئے گئے انتظامات پر اظہار مسرت کیا۔ سیکرٹری ہیلتھ احمد جاوید قاضی نے افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیا پاکستان قومی صحت کارڈ کا اجرا انتہائی خوش آئند اقدام ہے اور اس میں ہر خاندان کیلئے دس لاکھ روپے کی رقم مختص کی گئی اور علاج کیلئے راہنمائی حاصل کرنے کیلئے 080009009 پر ٹول فری پر کال کی جاسکتی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ نیا پاکستان قومی صحت ایپ کو ڈان لوڈ کر کے بھی معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ سٹیٹ لائف انشورنس، نشتر ہسپتال کا عملہ ہر دم معاونت فراہم کرےگا۔وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر رانا الطاف احمد کا اس موقع پر کہنا تھا کہ وزیراعظم پاکستان اور پنجاب گورنمنٹ کی صحت کے حوالے سے ان انقلابی اقدامات کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے،قابل ذکر اور حیران کن طور پر جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو تا حال با اختیار بنانے کے حکومتی دعوے عملی طور پر غلط ثابت ہوئے کیونکہ ساتھ پنجاب سیکرٹریٹ کے سیکرٹریز کی موجودگی میں سیکرٹری ہیلتھ پنجاب کا قومی صحت کارڈ کا افتتاح کرناکئی سوالات کو جنم لیتا ہے کہ حکومتی دعوں کے برعکس تخت لاہور کا تسلط ختم نہ کیا جاسکا۔ ذرائع کے مطابق رولز آف بزنس میں ترمیم کئے بغیریاعلیحدہ صوبہ بنائے بغیر مکمل اختیارات دینا نا ممکن ہے، واضح رہے کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ صرف ایڈمنسٹریٹو یونٹ کا درجہ رکھتاہے۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں