کورونا وائرس: بیماری کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سخت اقدامات کے باوجود چین میں انفیکشن کی ریکارڈ تعداد میں اضافہ - Baithak News

کورونا وائرس: بیماری کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سخت اقدامات کے باوجود چین میں انفیکشن کی ریکارڈ تعداد میں اضافہ

چین نے وبائی مرض کے آغاز کے بعد سے روزانہ سب سے زیادہ کوویڈ کیسز ریکارڈ کیے ہیں

اس کے باوجود کہ ملک میں وائرس کے خاتمے کے لیے سخت اقدامات کیے گئے ہیں۔ملک کے جنوب میں تجارتی مرکز، دارالحکومت بیجنگ اور صوبہ گوانگزو سمیت کئی بڑے شہروں میں وبا پھیلی ہوئی ہے۔
بدھ کے روز، ملک میں 31,527 کیسز ریکارڈ کیے گئے، جو اپریل میں ریکارڈ کیے گئے 28,000 کیسز کی چوٹی سے زیادہ ہے، جب چین نے اپنے سب سے بڑے شہر شنگھائی میں لاک ڈاؤن کے اقدامات نافذ کیے تھے۔
یہ اس وقت سامنے آیا ہے جب سخت لاک ڈاؤن اقدامات بدامنی کو ہوا دیتے ہیں۔
کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو محدود کرنے کے لیے چین کی “زیرو کوویڈ” پالیسی نے اس کے 1.4 بلین لوگوں کو تو بچایا لیکن معیشت اور عام لوگوں کی زندگیوں کو ایک تکلیف دہ دھچکا لگا۔
اس کے باوجود، ملک میں کووِڈ کی وجہ سے لگائی گئی کچھ پابندیوں میں نرمی کے ہفتوں بعد انفیکشن کی بڑھتی ہوئی لہر بھی سامنے آئی ہے۔
حکام نے سرکاری سہولیات میں رابطوں پر سات دن سے پانچ دن اور گھر پر تین دن تک قرنطینہ کی پابندیوں کو کم کرنا شروع کر دیا، اور ثانوی رابطوں کو ریکارڈ کرنا بند کر دیا، جس کی وجہ سے بہت سے لوگوں کو قرنطینہ میں رہنے سے بچنے کا موقع ملا۔
عہدیداروں نے اس سال کے شروع میں شنگھائی کو جس طرح کا سامنا کرنا پڑا اس طرح کے کمبل لاک ڈاؤن نافذ کرنے سے بچنے کی بھی کوشش کی ہے۔

پنجاب حکومت عمران خان کے لانگ مارچ کا حصہ نہیں بنے گی، وزیر داخلہ پنجاب

Shakira could face 8 years in jail

پاکستان میں صحت عامہ کی صورتحال تباہی کے دہانے پر ہے، عالمی ادارہ صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں