گیلانی نے سینیٹ میں اپوزیشن کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ - Baithak News

گیلانی نے سینیٹ میں اپوزیشن کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

اسلام آباد: اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے مبینہ طور پر اسٹیٹ بینک ترمیمی بل پر حکومت کی حمایت کرنے کے دباؤ پر، جس کی وہ نفی کرتے ہیں، پیپلز پارٹی کے یوسف رضا گیلانی نے سینیٹ میں قائد حزب اختلاف کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

یوسف رضا گیلانی نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ میں نے اپنا استعفیٰ پارٹی قیادت کو پیش کر دیا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ وہ اب اپوزیشن لیڈر نہیں رہنا چاہتے۔

چیئرمین سینیٹ اور سپیکر پر تنقید کرتے ہوئے گیلانی نے کہا کہ وہ ایوان کے رکھوالے ہیں حکومت کے نہیں، ان کا کردار غیر جانبدارانہ ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ چیئرمین سینیٹ حکومت کو سہولت فراہم کر رہے تھے، انہوں نے مزید کہا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بار سینیٹ کے چیئرمین کو بل کی منظوری کے لیے اپنا ووٹ ڈالنا پڑا۔

سینیٹ کے اہم اجلاس میں اپنی غیر حاضری کے بارے میں بات کرتے ہوئے، گیلانی نے کہا کہ ان کے عملے کو 28 جنوری کے سینیٹ اجلاس کا ایجنڈا 27 جنوری کی رات 11:30 بجے موصول ہوا، جب کہ یہ ان کے گھر پر صبح 1 بجے پہنچا دیا گیا۔

رات گئے بل کو ایجنڈے میں شامل کرنا مناسب نہیں تھا۔

“یہ اتنا اہم ایجنڈا تھا، ہمیں اس پر غور کرنے کے لیے مزید وقت دینا چاہیے تھا۔ قومی مفاد سے متعلق ایسے اہم معاملات پر ایوان کو اعتماد میں لیا جاتا ہے، لیکن بدقسمتی سے ایسا نہیں ہوا،” انہوں نے کہا۔

پی پی پی کے سینیٹر نے کہا کہ بل متعلقہ قائمہ کمیٹی کو نہیں بھیجا گیا کیونکہ انہوں نے روشنی ڈالی کہ کمیٹیوں میں بلوں پر بحث ہوتی ہے اور اس کے نتیجے میں قانون ساز کسی معاملے پر اتفاق رائے پیدا کرتے ہیں۔

گیلانی نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی سے کہا کہ “چیئرمین نے سینیٹ کا اجلاس [صرف 30 منٹ] کے لیے معطل کر دیا، آپ نے حکومت کو سہولت فراہم کی، اپوزیشن کی نہیں۔”

مزید جانیں

مزید پڑھیں

صارفین کو ریلیف کی فراہمی کیلئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں:محمد ارشد

حکومت پنجاب کی ہدایت پراشیاء ضروریہ کی مقررہ نرخوں پرفراہمی کو یقینی بنایاجائے لیہ( بیٹھک رپورٹ )ضلع میں صارفین کو ریلیف کی فراہمی کے لئے اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ صارفین کو سستی اشیاء خورد نوش فراہم کی جاسکیںاس سلسلہ مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں