عماد وسیم نے سینٹرل کنٹریکٹ کے حوالے سے عدم دلچسپی کا اظہار کیا۔

“کراچی: عماد وسیم نے سینٹرل کنٹریکٹ سے لاتعلقی کا اظہار کردیا، ان کے مطابق وہ صرف قومی ٹیم کے لیے اچھی کارکردگی دکھانا چاہتے ہیں۔”
عماد وسیم نے گزشتہ روز ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا اور وہ نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز میں انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی کریں گے۔ انہوں نے گزشتہ روز پی سی بی کے سی او او سلمان نصیر اور چیف سلیکٹر وہاب ریاض سے ملاقات کی۔ذرائع کے مطابق عماد نے واضح کیا کہ وہ اپنا فیصلہ تبھی تبدیل کریں گے جب انہیں کم از کم ورلڈ کپ تک کھیلنے کی یقین دہانی کرائی جائے، جس پر وہاب نے انہیں کہا کہ ایسا ہی ہوگا۔ سی میں مشکلات سے بچنے کے لیے اس نے ریٹائر ہونے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے سلمان نصیر سے کہا کہ مختلف معاہدے پورے ہونے ہیں، اس لیے بورڈ سے درخواست ہے کہ این او سی نہ روکے، تاہم جب بھی قومی ٹیم کو ان کی ضرورت ہوگی وہ دستیاب ہوں گے۔یہ بھی پڑھیں: قومی کرکٹر عماد وسیم نے انٹرنیشنل کرکٹ سے کنارہ کشی اختیار کر لیعماد نے سینٹرل کنٹریکٹ میں عدم دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کے لیے پاکستان کا مفاد اہم ہے، وہ چاہتے ہیں کہ ٹیم ورلڈ کپ جیتے، کنٹریکٹ کے بغیر کھیلنے میں کوئی حرج نہیں، بورڈ حکام نے ان کی بات مان لی ہے۔ تاہم کنٹریکٹ پر فیصلہ چیئرمین محسن نقوی سے مشاورت کے بعد کیا جائے گا۔آپ کو بتاتے چلیں کہ کنٹریکٹ کے بغیر کرکٹرز کو نچلی کیٹیگری میں معاوضہ دیا جاتا ہے۔دوسری جانب کپتان شاہین شاہ آفریدی نے عماد وسیم کی واپسی پر قائل کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔ انہوں نے ایچ بی ایل پی ایس ایل کے دوران اس آل راؤنڈر سے کہا تھا کہ قومی ٹیم کو ان کی ضرورت ہے، اس لیے سابقہ ​​فیصلہ تبدیل کریں۔ شاہین نے عماد کو بھی 6-7 کہا۔ کئی بار ان کے الفاظ نے انہیں انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی کا حوصلہ دیا۔

اپنا تبصرہ لکھیں