بلڈنگ بائی لازکی دھجیاں،قدیمی ہوٹل گراکرکمرشل پلازہ تعمیر

  • Home
  • ملتان
  • بلڈنگ بائی لازکی دھجیاں،قدیمی ہوٹل گراکرکمرشل پلازہ تعمیر
قدیمی ہوٹل

ملتان(سٹی رپورٹر)ایم ڈی اے انتظامیہ کی ملی بھگت، بااثر شخص نے ڈیرہ اڈا چوک پر بغیر منظوری کے قدیمی ہوٹل کو گرا کر کمرشل پلازہ تعمیر کر لیا۔لاکھوں روپے نقشہ فیس و جرمانہ ہضم کرکے بلڈنگ بائی لاز کو بھی ردی کی ٹوکری میں ڈال دیا۔ذرائع نے بتایا ہے کہ بااثر مالکان نے ٹاؤن پلاننگ کے بلڈنگ انسپکٹر اصغر رفیع کھادل کی آشیر باد سے کمرشل عمارت کا غیرقانونی طور پر سٹیٹس تبدیل کیا۔ 25سال قبل اس جگہ پر منگول ہوٹل کے نام سے کمرشل تعمیر کی گئی۔ اس وقت یہ علاقہ ایم ڈی اے کے زیر کنٹرول نہ ہونے کی وجہ سے ہوٹل کا نقشہ ایم سی ایم سے منظور کرایا گیا۔ اس کے بعد یہ علاقہ ایم سی ایم سے ایم ڈی اے کو دےدیا گیا۔

بااثر مالکان کی طرف سے جب ہوٹل کو گراکر پلازے میں تبدیل کیا گیا. تو انہوں نے اس کی منظوری ایم ڈی اے سے لئے بغیر باہر پرانی عمارت کی ڈھال کھڑی کرکے اندر خانے کمرشل پلازہ کی تعمیر شروع کرادی۔ جب اس خفیہ کمرشل تعمیر کا انکشاف ہوا تو اس عمارت کے خلاف کارروائی کے لئےایم ڈی اے کے شعبہ انفورسمنٹ اور ٹاؤن پلاننگ کی انتظامیہ ذمہ داری ایک دوسرے پر ڈالتی رہی۔ اس دوران کمرشل پلازہ تعمیر ہونے کے بعد کمرشل سرگرمیوں کے لئے اوپن کردیا گیا۔ جب یہ معاملہ ہائی لائٹ ہوا اور اعلیٰ حکام کے نوٹس میں یہ کیس آیا. تو ایم ڈی اے عملہ نے ناجائز تعمیر پلازہ مالک کو وضاحت دینے کے لئے نوٹس جاری کردیا. مگر بااثر مالک نے نہ نوٹس کا جواب دیا اور نہ ہی وعدے کے مطابق پلازے کا ریوائز نقشہ جمع کرایا۔

کمرشل پلازے

اس کیس کو ڈیل کرنے والے ڈپٹی ڈائریکٹر ٹاؤن پلاننگ ساؤتھ علی رضا سے معلومات لی گئیں. تو اس نے کہا کہ یہ کیس میرے نوٹس میں ماتحت متعلقہ بلڈنگ انسپکٹر اصغر رفیع کھادل نے دیا. ہی نہیں جبکہ انفورسمنٹ انسپکٹر محمد احمد سے اس کے خلاف کارروائی کے حوالے سے پوچھا گیا. تو اس نے بتایا کہ اب اس علاقے کا انفورسمنٹ انسپکٹر بھی اصغر رفیع بن گیا ہے. وہی صحیح صورتحال بتا سکتا ہے۔ اسکے بعد جب اصغر رفیع کھادل سے موقف لینے کے لئے رابطہ کیا گیا. تو اس نے فون ہی اٹینڈ نہ کیا۔

اسناجائز کمرشل تعمیر کے حوالے سے جب موجودہ ڈپٹی ڈائریکٹر ٹاؤن پلاننگ ساؤتھ مس شمائلہ کرن سے موقف لیا گیا تو انہوں نے بتایا. کہ اس کمرشل پلازے کا ریوائز نقشہ ابھی تک جمع نہیں کرایا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ انفورسمنٹ شعبہ سے رپورٹ طلب کرلی گئی ہے۔ اس کے بعد قانون کے مطابق اس کمرشل پلازے کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

آج کا اخبار

Leave a Comment
×

Hello!

Click one of our contacts below to chat on WhatsApp

× How can I help you?