زکریا یونیورسٹی:”نذرانہ لائو،ترقی پائو“کااصول رائج،23ملازمین ”فیضیاب“ - Baithak News

زکریا یونیورسٹی:”نذرانہ لائو،ترقی پائو“کااصول رائج،23ملازمین ”فیضیاب“

ملتان (سہیل چوہدری) بہاؤالدین زکریا یونیورسٹی میں لا قانونیت اور بے ضابطگیاں آخری حدوں کو چھونے لگیں۔ نذرانہ لاؤ ترقیاں پاؤ اصول رائج، قواعد وہ ضوابط اور حکومتی احکامات کے بر عکس 23 ملازمین فیضیاب جبکہ سنیارٹی لسٹ کے مطابق پروموشن کے حقدار ملازمین افسران کے دفاتر کے دھکے کھانے پر مجبور ہیں ۔اس ضمن میں معلوم ہوا ہے کہ سروسز اینڈ ایڈمنسٹریشن حکومت پنجاب کے نوٹیفکیشن نمبر نوٹیفکیشن نمبر SOP-III(S&GAD)3-50/2018بتاریخ 14 فروری 2018تحت اجلاس میں منظوری دی گئی اور نمبر Univ-/Admin-II/1075 21جنوری 2019 کے ذریعے مطلع کیا۔ سلیکشن کمیٹی نے 26جنوری 2022 اور 14مارچ 2022 کو ہونیوالے اپنے اجلاسوں میں BS-11 (12570-880-38970) کے علاوہ BS-11 میں جونیئر کلرک کے طور پر پیروکاروں کو ترقی دی۔ شرائط و ضوابط کے مطابق وہ یونیورسٹی کے قانون، قوانین، قواعد و ضوابط کے تحت چلیں گے جیسا کہ اس وقت موجود ہیں اور وقتاً فوقتاً ان میں ترمیم کی جا سکتی ہے۔انہیں ایک سال کے پروبیشن پر رکھا جائے گا۔ انکی تقرری تمام تعلیمی دستاویزات کی تصدیق سے مشروط ہوگی،تجربہ کی تصدیق وغیرہ۔ اگر، ایسے ملازمین کے دستاویزات کی تصدیق نہیں کی جاتی ہے/جعلی/بوگس قرار دیا جاتا ہے، مجرم ملازم (ملازمین) کو خدمات سے برخاست کر دیا جائے گا۔ انکی تنخواہیں انکے تعلیمی سرٹیفکیٹس/تجربے کی تصدیق کے بعد جاری کی جائیں گی۔ وہ 15 دنوں کے اندر نادرا سے فیملی رجسٹریشن سرٹیفکیٹ (FRC) جمع کرائیں گے۔ انہیں اس تقرری کے آرڈر کے اجراء کے 15 دنوں کے اندر ڈیوٹی جوائن کرنا ہو گی۔ انکی خدمات ایک ماہ کے نوٹس یا اسکے بدلے میں ایک ماہ کی تنخواہ پر ختم ہو جاتی ہیں، اگر کوئی اس مدت کے دوران استعفیٰ دینا چاہتا ہے، تو اسے ایک ماہ کا نوٹس دینا ہو گا یا اسکے بدلے میں ایک ماہ کی تنخواہ سرنڈر کرنا ہو گی۔ انکے متعلقہ پے سکیل میں انکا سالانہ اضافہ کم از کم مکمل ہونے کے بعد دسمبر کے پہلے دن کی وجہ سے گر جائے گا۔ انکی تنخواہ مقرر/حفاظت کے مطابق ہوگی۔ یونیورسٹی کے سابق رجسٹرار صہیب راشد ایمپلائز ایسوسی ایشن کے مین عہدیداروں نے اس نوٹیفکیشن کا فائدہ اٹھاتے ہوئے درجہ چہارم کے 23 ملازمین سے مبینہ طور پر لاکھوں روپے وصول کر کے انکی پروموشن کروا دی اور حق دار پروموشن سے محروم رہ گئے اور وہ انصاف کے حصول کیلئے آج بھی افسران کے دفاتر کے دھکے کھانے پر مجبور ہیں ۔دوسری جانب چونکہ سنیارٹی لسٹ کو نظر انداز کرتے ہوئے نذرانے کی بنیاد پر پروموشن دی گئی تھی۔ اس لیے یونیورسٹی کے خزانہ دار صفدر لنگاہ نے پروموشن حاصل کرنیوالے ملازمین کی پے فکسیشن کا کیس روک دیا اور رجسٹرار سے سنیارٹی لسٹ طلب کی ہے۔ مذکورہ صورتحال کی وجہ سے ایمپلائز ایسوسی ایشن نے خزانہ دار پر دباؤ بڑھانے کیلئے احتجاجی مظاہرے بھی کئے مگر ابھی تک پروموشن حاصل کرنیوالے ملازمین کی پے فکسیشن نہیں ہو سکی ہے۔ بہاؤالدین زکریا یونیورسٹی کے ریذیڈنٹ آڈیٹر ظفر اقبال نے بتایا کہ چونکہ ملازمین کی پروموشن میرٹ پر نہیں ہوئی تھی ۔اس لئے انکی پے فکسیشن کا کیس سنڈیکیٹ کمیٹی میں رکھا جا رہا ہے۔ سنڈیکیٹ کمیٹی جو فیصلہ کرے گی اس پر عملدرآمد کیا جائے گا۔ ایمپلائز ایسوسی ایشن کے صدر ملک صفدر نے کہا کہ ملازمین کی پروموشن کیلئے کوئی پیسے نہیں لئے گئے، انکی پروموشن سنیارٹی کم فٹنس کی بنیاد پر کی گئی ہے۔

مزید جانیں

مزید پڑھیں
کارڈیالوجی

بہاولپور: 625اسامیاں خالی،کارڈیالوجی سنٹر آج بھی عملاً غیرفعال

بہاول پور(رانا مجاہد/ ڈسٹرکٹ بیورو)بہاول پور کارڈیک سنٹر گریڈ 01 تا 20 کی 625 آسامیوں پر تعیناتیاں تا حال نہ ہو سکی۔ بہاول پور کارڈیک سنٹر جس کو خوبصورت بلڈنگ اور جدید سہولیات کے حوالے سےسٹیٹ آف آرٹ کہا جاتا مزید پڑھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں