حکومت نے آئی ایم ایف معاہدے پر عملدرآمد شروع کر دیا ہے۔

حکومت نے انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) معاہدے پر عملدرآمد شروع کر دیا ہے۔ پٹرولیم ڈویژن نے گیس کی فراہمی کی ترجیحات پر نظرثانی کی۔ پیٹرولیم ڈویژن نے آئی ایم ایف کے معاہدے کے مطابق گیس کی فراہمی کی ترجیحات پر نظرثانی کی اور کیپٹیو پاور پلانٹس کو ترجیحی شعبوں کی فہرست سے نکال دیا۔ پٹرولیم ڈویژن کے ترجمان نے بزنس ریکارڈر کو بتایا کہ اس فیصلے نے حکومت کے نفاذ کا آغاز کر دیا ہے۔ آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے میں بیان کردہ اقدامات۔ابتدائی قدم کے طور پر، ڈویژن نے کیپٹیو پاور پلانٹس کا ٹیرف 1100 روپے سے بڑھا کر 2750 روپے فی MMBTU کر دیا ہے۔ مزید برآں، حکومت نے کیپٹیو پاور پلانٹس کو گیس کی فراہمی کو ترجیح دی ہے، اور مستقبل میں گیس ٹیرف کی نظرثانی میں ٹیرف کا مزید جائزہ لینے کا ارادہ رکھتی ہے۔ ،

اپنا تبصرہ لکھیں