روس نے ملک میں دھماکے کی بڑی سازش ناکام بنانے کا دعویٰ کیا، 3 دہشت گرد گرفتار

“روس کی خفیہ سروس نے ‘وسطی ایشیائی ملک’ سے 3 مشتبہ دہشت گردوں کو گرفتار کرکے ملک میں دھماکوں کی بڑی سازش ناکام بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔”
خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق روسی خفیہ سروس ایف ایس بی نے مشتبہ افراد سے دیسی ساختہ بم، کیمیائی مواد اور تباہ کن مواد قبضے میں لے لیا۔ ملزمان نے بم میں استعمال کرنے کے لیے ایک کلو کیل خریدے تھے۔ روسی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ تین افراد استوارپول کے پرہجوم علاقے میں بم دھماکہ کرنے کی تیاری کر رہے تھے۔دوسری جانب ماسکو میں دہشت گرد حملے کے الزام میں تاجکستان سے مزید 9 افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے جب کہ روس کی تحقیقاتی کمیٹی نے دعویٰ کیا ہے کہ ماسکو حملے کے ملزمان نے تفتیش کے دوران کہا ہے کہ ان تک پہنچنے پر انہیں انعام دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔ یوکرین میں چلا گیا۔یاد رہے کہ 22 مارچ کی رات ماسکو کے کروکس سٹی ہال پر چار مسلح افراد نے حملہ کیا تھا۔ حملہ آوروں نے اندھا دھند فائرنگ کے بعد فائرنگ بھی کی جس سے کنسرٹ ہال میں آگ لگ گئی۔ روسی حکام نے کہا۔ اس حملے میں اب تک 140 افراد ہلاک اور 150 سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔ دوسری جانب امریکی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ حملے کے چند گھنٹے بعد دہشت گرد تنظیم داعش نے ذمہ داری قبول کرلی۔ امریکی حکام نے کہا کہ انہوں نے اس ماہ کے شروع میں روس کو اس حملے کے بارے میں خبردار کیا تھا۔

اپنا تبصرہ لکھیں