صدر پیوٹن کے کنسرٹ پر مسلمان انتہا پسندوں کا حملہ

“ماسکو: روس کے صدر نے ماسکو میں کنسرٹ پر حملے کا ذمہ دار مسلمان انتہا پسندوں کو قرار دے دیا۔”
روس کے صدر ولادی میر پیوٹن نے سوشل میڈیا پر ایک بیان میں کہا کہ ماسکو میں کنسرٹ ہال پر حملے کے ذمہ دار مسلمان انتہا پسند ہیں۔ واضح رہے کہ اس نسل کشی میں یوکرین کا کردار ہے۔ مسلم انتہا پسندوں نے یہ حملہ اس نظریے کے زیر اثر کیا جس کے تحت مسلم دنیا صدیوں تک جنگیں لڑتی رہی۔صدر پیوٹن نے کہا کہ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اس حملے کا فائدہ کس کو ہوا؟ اس ہولناک حملے کا مقصد لوگوں میں خوف اور افراتفری پھیلانا اور یوکرین کے عوام کو دکھانا تھا کہ یوکرین کی حکومت نے اپنا سب کچھ نہیں کھویا ہے۔ ماسکو میں کنسرٹ کے دوران ہونے والے حملے میں 139 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے تھے۔

اپنا تبصرہ لکھیں