9 مئی کا سانحہ؛ علی امین گنڈا پور سمیت تحریک انصاف کے 23 رہنماؤں کے وارنٹ گرفتاری جاری

“راولپنڈی: 9 مئی کو عدالت نے جی ایچ کیو، آرمی میوزیم، دفتر پر حملوں سمیت جلاؤ گھیراؤ کے 12 مقدمات میں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا علی امین گنڈا پور سمیت تحریک انصاف کے 23 ارکان اور رہنماؤں کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا علی امین گنڈا پور۔ ایک حساس ادارے کا، میٹرو اسٹیشن۔”
انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے جن تحریک انصاف کے ارکان کو گرفتار کیا ہے ان میں علی امین گنڈا پور، شبلی فراز، مراد سعید، زرتاج گل، شیریں مزاری، زلفی بخاری، شہباز گل، عثمان سعید بسرا، عثمان ڈار شامل ہیں۔ ان کے علاوہ ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل مسرت جمشید چیمہ کے بھی وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے ہیں۔ذرائع کے مطابق آر اے بازار، ریس کورس، نیو ٹاؤن، سول لائنز، تھانہ صادق آباد کی تفتیشی ٹیموں نے وارنٹ گرفتاری حاصل کر لیے ہیں اور وارنٹ گرفتاری پر عملدرآمد کے لیے پولیس ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہیں۔دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنماؤں نے عبوری ضمانت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔عدالتی ذرائع کے مطابق پولیس کی تفتیشی ٹیم نے انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش ہو کر تفتیش مکمل کرنے کے لیے وارنٹ گرفتاری کی استدعا کی، جج ملک اعجاز آصف نے یہ درخواستیں منظور کر لیں۔ جاری نہیں ہوا۔

اپنا تبصرہ لکھیں