اشون کی 500 ویں ٹیسٹ وکٹ: نئے کارناموں کا انتظار ہے

تامل ناڈو سے تعلق رکھنے والے روی چندرن ایشون نے 45 سال بعد ہندوستانی کرکٹ میں نیا ریکارڈ اپنے نام کرلیا۔ اس کے علاوہ اشون نے ٹیسٹ کرکٹ میں 500 وکٹوں کا سنگ میل چھو کر ایک نیا ریکارڈ بنایا ہے۔ چنئی سے تعلق رکھنے والے اشون نے 2011 میں ہندوستانی ٹیم میں ڈیبیو کیا۔ وہ اب تک 98 ٹیسٹ میچ کھیل چکے ہیں اور 500 وکٹیں لے چکے ہیں۔ ہندستان اور انگلینڈ کے درمیان راجکوٹ میں جاری تیسرے ٹیسٹ میں اشون نے یہ نیا سنگ میل عبور کیا۔

اشون ٹاپ 5 گیند بازوں میں شامل ہیں
اگر ہم اس صدی کے بہترین اسپنرز کی درجہ بندی کریں تو ماہرین کا کہنا ہے کہ اشون کا نام ٹاپ 5 میں شامل ہوگا۔ اشون نے چنئی کی سڑکوں پر ٹینس بال سے کرکٹ کھیلی اور اسپن کی مختلف چالیں اور ہنر سیکھے۔ خاص طور پر اشون کی کلک بولنگ اور کیرم بولنگ نے انہیں ٹیسٹ کرکٹ میں بے پناہ عزت اور نام کمایا۔ اشون، جنہوں نے اسپن کی مختلف پیچیدگیوں میں مہارت حاصل کی ہے، ٹیسٹ کرکٹ میں کسی بھی پچ پر بلے بازوں کے لیے شیر کا خواب رہا ہے۔ اشون کی ذہانت، ان کی باریک ‘کیرم باؤلنگ’، ان کی ‘آرم باؤلنگ’ اور ‘لائن لینتھ’ پر آف اسپن کی ان کی کنٹرولڈ ڈیلیوری ان کی سب سے بڑی طاقت ہے۔ بہت سے لوگ اس بات سے اتفاق کرتے ہیں کہ جب اشون ایک اوور پھینکتے ہیں تو تمام 6 گیندوں کو مختلف طریقوں سے پھینکا جاتا ہے اور زیادہ تر وقت ایک ہی طرح سے نہیں۔ اشون ہر گیند کو مختلف طریقے سے پھینک کر بلے بازوں کا دم گھٹنے میں مہارت رکھتے ہیں۔ خاص طور پر اسپن دوستانہ پچوں پر اشون بلے بازوں کے خلاف راج کریں گے۔

اپنا تبصرہ لکھیں