سرعام سزائے موت کا بل سینیٹ میں اکثریت سے مسترد

سینیٹ نے سزائے موت کا بل بھاری اکثریت سے مسترد کر دیا ہے۔

سینیٹ کا اجلاس چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت ہوا، سینیٹر مشتاق احمد نے فوجداری قوانین میں ترمیم کا بل پیش کیا تاکہ ریپ کے مجرموں کو سرعام پھانسی دی جاسکے.

سینیٹ نے بل متعارف کرانے کی منظوری دی، سینیٹر مشتاق احمد نے بل کو مسترد کردیا۔

تجویز بل پیش کرنے کی تجویز کے حق میں 14 اور مخالفت میں 24 ووٹ پڑے۔

سینیٹر تاج حیدر نے بل کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ سرعام پھانسی سے انسانیت کا احترام ختم ہو جائے گا۔

مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر اسحاق ڈار نے کہا کہ (ن) لیگ سرعام پھانسی کے قانون کے حق میں نہیں، قانون میں سزائے موت کی گنجائش موجود ہے، سرعام پھانسی کا بل کسی طور جائز نہیں، عوامی پھانسی نہیں ہونی چاہیے۔

اپنا تبصرہ لکھیں