صدر، چینی شہریوں کے تحفظ کے لیے تمام ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔

“اسلام آباد: صدر آصف علی زرداری نے چینی سفارت خانے کا دورہ کیا اور بشام میں دہشت گردی کے واقعے میں چینی شہریوں کی ہلاکت پر حکومت اور قوم کی جانب سے اظہار تعزیت کیا۔”
تفصیلات کے مطابق صدر آصف علی زرداری نے اسلام آباد میں چینی سفارت خانے کا دورہ کیا، جہاں چینی سفیر چیانگ زیڈونگ نے صدر آصف علی زرداری کا سفارت خانے پہنچنے پر استقبال کیا۔ انہوں نے پاکستانی حکومت اور عوام کی جانب سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی قوم چینی عوام کے غم میں برابر کی شریک ہے اور دکھ کی اس گھڑی میں ان کے ساتھ کھڑی ہے۔انہوں نے کہا کہ دشمن اس بات کو قبول نہیں کر سکتے کہ پاک چین دوطرفہ تعلقات مزید مضبوط ہو رہے ہیں، گھناؤنی کارروائیوں میں ملوث مجرموں کو پکڑ کر انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا، پاکستان میں مختلف منصوبوں پر کام کرنے والے چینی شہریوں کے تحفظ کے لیے تمام ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔ یقین رکھیں کہ یہ غیر انسانی حملہ دونوں ممالک کے درمیان پائیدار دوستی اور مشترکہ اقدار پر حملہ ہے۔صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ شانگلہ واقعہ پاک چین دوستی کے دشمنوں نے منظم کیا، انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان دہشت گردوں کو خطے میں امن، خوشحالی اور سلامتی کے ہمارے مشترکہ مقاصد کو کمزور کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔ انہوں نے ذاتی طور پر سفارت خانے کا دورہ کرنے پر صدر کا شکریہ ادا کیا اور تعزیت کا اظہار کیا اور انسداد دہشت گردی کے تعاون کو بڑھانے، پاکستان میں چینی کارکنوں کو تحفظ فراہم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ دہشت گرد انسانیت کے دشمن ہیں اور انہیں بے گناہ لوگوں کو نشانہ بنانے پر گرفتار کیا جائے۔ چینی سفیر نے پاکستان کے ساتھ تعاون کو مزید مضبوط بنانے اور سی پیک اور دیگر منصوبوں کے لیے تعاون جاری رکھنے کے لیے چین کے عزم کا اعادہ کیا اور کہا کہ زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے پاکستانیوں نے دہشت گرد حملے کی مذمت کی۔ ہندوستان کی سماجی و اقتصادی ترقی میں اہم کردار ادا کیا۔

اپنا تبصرہ لکھیں