وفاقی وزیر اطلاعات امریکہ نے عمران خان کو سائفر ایشو پر مصدقہ جھوٹا قرار دے دیا۔

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات عطاء اللہ تارڈ نے امریکی ایوان نمائندگان کی ذیلی کمیٹی میں سائفر سے متعلق ڈونلڈ لو کے بیان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج امریکا نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سے اس بارے میں پوچھا ہے۔ . سائفر مسئلہ عمران خان کو مصدقہ جھوٹا قرار دیا گیا ہے۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات عطاء اللہ تارڑ نے کہا کہ پی ٹی آئی نے جھوٹ بول کر پوری قوم کو گمراہ کیا اور اپنے حسابی سیاسی منصوبے کے تحت پاکستان کے بین الاقوامی تعلقات کو متاثر کرنے کی کوشش کی۔ وضاحتی.انہوں نے کہا کہ ایک شخص نے اپنے ذاتی مفاد کو ریاست کے مفاد پر ترجیح دی۔ پاکستان کی تاریخ میں ایسا کم ہی ہوا ہے کہ کوئی سیاسی رہنما اپنی ذاتی انا کی تسکین کے لیے قومی مفاد کو داؤ پر لگاتا ہو۔ ملک سے جھوٹ بولنا اور ایسی کہانی بنانا جس میں ایک ذرہ بھی سچائی نہ ہو، جھوٹ کا انجام ہمیشہ برا ہوتا ہے۔وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پی ٹی آئی کے بانی چیئرمین نے جلسے میں سائفر لہرایا اور کہا کہ ان کی حکومت گرانے کی سازش ہے، پاکستان کے تشخص کو متاثر کرنے کی سازش ہے تاہم آج امریکی نائب وزیر خارجہ ڈونلڈ لو نے کہا کہ سائفر کی کہانی مکمل طور پر جھوٹ پر مبنی ہے۔ .انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی نے اپنی سیاست چمکانے کے لیے قومی مفاد کو داؤ پر لگایا اور آج پوری دنیا کے سامنے اس کی توہین ہو رہی ہے۔ اس کہانی کو مسترد کر دیا گیا اور امریکی کانگریس کی پوری کمیٹی نے پی ٹی آئی کے بانی کو جھوٹا قرار دے دیا۔عطاء اللہ تارڑ نے کہا کہ پی ٹی آئی کے سابق چیئرمین نے پورے ملک سے جھوٹ بولا، پی ٹی آئی دوسرے درجے کی سیاست کر رہی ہے، ڈونلڈ لو نے انتخابی عمل کا جائزہ لینے والے 5000 آزاد مبصرین کا بھی ذکر کیا اور یہ بھی کہا کہ پاکستان میں کئی مقامات پر خواتین کو امریکہ سے زیادہ حقوق حاصل ہیں۔انہوں نے کہا کہ بانی پی ٹی آئی نے نوجوان نسل کے ذہنوں کو گمراہ کیا اور پوری دنیا نے بانی پی ٹی آئی کا مکروہ اور مکروہ چہرہ دیکھا تو انہوں نے یو ٹرن لیا، ان کے قول و فعل میں ہمیشہ تضاد رہا ہے، کیا کریں؟ ہم نے گزشتہ دو میں کیا جو برسوں سے کہا جا رہا تھا آج سچ ہو گیا، پوری دنیا نے دیکھا۔وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پی ٹی آئی کے بانی نے جھوٹ بولا اور غلط بیانی کی، سائفر کا کیس چل رہا ہے، انہوں نے سائفر کی آڑ میں پاکستان کے دشمنوں کو فائدہ پہنچایا اور ریاست پاکستان کو نقصان پہنچایا۔ سزا مل گئی، وہ خود کانگریس کمیٹی میں گئے، انہوں نے سوچا ہوگا کہ وہاں سے کوئی بیان آئے گا جس سے ہماری مدد ہو گی۔وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے باہر احتجاج کرکے کہہ رہے ہیں کہ ہمارے لیڈر کو رہا کرو، ورنہ پاکستان کو امداد نہ دینا، پاکستان کے غریب عوام کی امداد بند کرنا چاہتے ہیں۔ امریکی کانگریس کی کمیٹی کا جھوٹا

اپنا تبصرہ لکھیں