پی ٹی آئی کور کمیٹی کا اجلاس، مریم اورنگزیب اور رانا ثناء اللہ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ

“پاکستان تحریک انصاف کے رہنما رؤف حسن کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کور کمیٹی کے اجلاس میں مہنگائی پر بھی بات ہوئی، آنے والے دنوں میں ملک میں شدید مہنگائی کا امکان ہے۔”
پی ٹی آئی کور کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے حسن رؤف نے کہا کہ عوام کو ریلیف دینے کے لیے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ اجلاس میں قیصر، علی محمد خان، شہباز گل اور دیگر پارٹی رہنماؤں نے شرکت کی۔انہوں نے کہا کہ سجاد برکی اور عاطف خان کے خلاف سنگین پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے، کور کمیٹی کے ارکان نے اس کی شدید مذمت کی ہے۔ رؤف حسن نے کہا کہ کور کمیٹی نے رانا ثناء اللہ اور مریم اورنگزیب کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ آج بھی رانا ثناء اللہ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی کوشش کی گئی تاہم پولیس نے مقدمہ درج نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ ہم سب تھانے جا کر مقدمہ درج کرائیں گے، اگر پولیس اپنے اصرار پر ڈٹی رہی تو عدالت سے رجوع کریں گے۔رؤف حسن نے کہا کہ تمام ارکان اڈیالہ جیل کے سامنے جا کر دھرنا دیں گے۔ .اسلام آباد میں ہونے والے اپنے اجلاس میں پی ٹی آئی کی کور کمیٹی نے آئندہ ماہ کے دوران پارٹی کی متعدد سرگرمیوں کا بھی فیصلہ کیا۔ مبینہ دھاندلی کے خلاف 30 مارچ کو اسلام آباد اور 21 اپریل کو کراچی میں جلسہ منعقد کرنے کا فیصلہ اور منظوری دی گئی۔ انتخابات 8 فروری کو ہوں گے۔کور کمیٹی نے آئی ایم ایف کے نئے اقتصادی پیکج کے موضوع پر 25 مارچ کو اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرنے کی بھی منظوری دی۔ بریفنگ دی گئی۔ کئی مقدمات میں بانی صدر کی بریت سے اجلاس کو تازہ ہوا کا سانس ملا۔ اور عمران خان کی سزا کے خلاف عدلیہ میں مقدمات اور اپیلوں کا جلد فیصلہ کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔کور کمیٹی نے پنجاب کے اراکین اسمبلی کے گزشتہ روز سردار لطیف خان کھوسہ کی رہائش گاہ پر ہونے والے اجلاس کی منظوری دی۔ کور کمیٹی نے ڈونلڈ لو کی کانگریس کمیٹی کے سامنے پیشی اور بیان اور اسد مجید کے ڈونلڈ لو کے بیان کے مواد کا بھی جائزہ لیا۔ لیکن اس کا ردعمل جاننا ضروری تھا۔کمیٹی نے اعلان کیا کہ مرکزی سیکرٹری اطلاعات پاکستان تحریک انصاف کور کمیٹی کے فیصلوں کی تشہیر اور اشاعت کے مجاز ہیں۔

اپنا تبصرہ لکھیں