بلاول بھٹو نے عوامی مسائل کے حل کے لیے حکومت کا ساتھ دینے کا فیصلہ کر لیا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ہم نے عوام کے مسائل کے حل کے لیے وفاقی حکومت کا ساتھ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کو وقت دیا جائے تو پاکستان کو معاشی بحران سے نکالیں گے۔انہوں نے کہا کہ عدالتی نظام میں اصلاحات کو آگے بڑھانا ہو گا اور صوبائی سطح پر کسان کارڈ میں تبدیلیاں کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ بھٹو ریفرنس کا مختصر حکم نامہ جاری کر دیا گیا ہے، تفصیلی حکم کا انتظار ہے، جس کے بعد گڑھی خدا بخش میں تاریخی جلسہ ہو گا۔بلاول بھٹو نے کہا کہ میں بھٹو ریفرنس کے بعد پہلی بار گڑھی خدا بخش آیا ہوں۔ عام انتخابات، ہاں سندھ کے دیگر شہروں میں بھی جلسے کریں گے۔انہوں نے کہا کہ انتخابات میں آپ کی حمایت پر میں سب کا مشکور ہوں، آپ کی جدوجہد کی وجہ سے ہی پیپلز پارٹی کو تاریخی کامیابی ملی۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ ہم ملک کو اس معاشی بحران سے نکالیں گے۔ ہم اپنے عوام کی آواز بنیں گے اور ان کے مسائل حل کریں گے۔ ہمیں اپنے مسائل کے حل کے لیے جدوجہد جاری رکھنی ہوگی۔انہوں نے کہا کہ عوامی نمائندے اپنے عوام کے لیے اسکیمیں پیش کریں گے، وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کو پورے سندھ کا دورہ کرنے کا کہا ہے، ہم نے انتخابات میں عوامی اقتصادی معاہدہ پیش کیا تھا، سندھ کی سرحدوں تک معاہدے پر عملدرآمد کریں گے۔ سندھ اور بلوچستان میں معاہدے پر عملدرآمد کی کوشش کی جائے گی۔ بلاول نے کہا کہ ہم صوبائی سطح پر کسان کارڈ بھی متعارف کرائیں گے، چھوٹے کسانوں کو ہر ممکن سہولیات فراہم کریں گے، ہم نے بے نظیر مزدور کارڈ پر عمل درآمد شروع کر دیا ہے۔بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ ہمیں عدالتی اصلاحات کی طرف بڑھنا ہے، ہم پاکستانی عوام کو انصاف دینا چاہتے ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ سب کو تیز رفتاری سے انصاف ملے۔ وہ ذوالفقار بھٹو کی برسی کے موقع پر گڑھی خدا بخش پہنچے۔ جہاں انہوں نے اپنے نانا اور دیگر شہداء کی قبروں پر حاضری دی اور پھول چڑھائے۔ اس موقع پر بلاول بھٹو کے ہمراہ پیپلز پارٹی شعبہ خواتین کی مرکزی چیئرپرسن فریال تالپور، وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ، صوبائی وزراء اور اراکین اسمبلی نے بھی شرکت کی۔

اپنا تبصرہ لکھیں