سائنس فکشن فلم ’عمرو عیر‘ کی عیدالاضحیٰ پر ریلیز کا اعلان

“طویل عرصے سے زیر بحث سائنس فکشن فلم ‘امرو عیار’ کا ٹریلر جاری کرتے ہوئے اسے عیدالاضحیٰ پر ریلیز کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔”
ابتدائی طور پر ‘امر آئیر’ کا موشن ٹیزر نومبر 2021 میں ریلیز ہوا تھا اور اسے 2022 میں ریلیز کرنے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن ایسا نہیں ہوا، موشن ٹیزر کے ایک سال بعد فلم کا پہلا مختصر ٹیزر جون 2023 میں ریلیز کیا گیا، ایک سال پہلے اس کا ٹریلر بڑی عید پر ریلیز کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ مختصر ٹریلر میں عثمان مختار کو مرکزی کردار کے طور پر دکھایا گیا ہے امر ائیر۔ٹریلر اشارہ کرتا ہے کہ عدنان صدیقی ان کے والد ہیں، جو انہیں بچپن میں خصوصی صلاحیتوں اور طاقتوں کے بارے میں کہانیاں سناتے ہیں۔ ٹریلر میں عثمان مختار کو ایک کالج کے پروفیسر کے طور پر بھی دکھایا گیا ہے، جہاں تمام طالب علم ہونہار ہیں اور بھٹو کی کہانیوں کے بارے میں گپ شپ کرتے نظر آتے ہیں اور عثمان مختار ان پر غصے میں نظر آتے ہیں۔ فلم میں صنم سعید بھی اہم کردار ادا کر رہی ہیں، انہیں امر ایئر کی پارٹنر کے طور پر دکھایا گیا ہے۔ٹریلر میں حمزہ علی عباسی، سیمی راحیل، ثنا نواز اور منظر صہبائی سمیت تقریباً تمام کرداروں کی جھلک دکھائی دیتی ہے۔ ٹریلر کو دیکھ کر لگتا ہے کہ پاکستانی شائقین کو ایک پاکستانی سائنس فکشن فلم میں جدید ٹیکنالوجی اور ایفیکٹس کا استعمال دیکھنے کو ملے گا۔ٹریلر کو ریلیز ہوئے کافی عرصہ ہو گیا ہے اور اس فلم کو ریلیز کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ اس سال عیدالاضحیٰ کے موقع پر…’امر ائیر‘ کی کاسٹ میں عثمان مختار، صنم سعید، فاران طاہر، علی قاضی، عدنان صدیقی، سمیع راحیل، ثناء فخر، منظر صہبائی، دانیال راحیل اور سلمان شوکت اور دیگر شامل ہیں جو ہزار سال پرانے مسلم ادب پر ​​مبنی ہے۔ داستان امیر حمزہ کی کہانی پر اسی نام کے کردار ‘میں شامل ہیں۔’داستان امیر حمزہ’ کو ایک ہزار سال پرانا اسلامی ادبی متن سمجھا جاتا ہے، جس کا عربی اور فارسی کے بعد مغل بادشاہوں کے دور میں اردو ادب میں ترجمہ کیا گیا تھا۔’امر امیر’ کے کردار کو کئی ڈراموں اور فلموں میں پیش کیا گیا ہے۔ لیکن یہ پہلا موقع ہے کہ ایک ہی کردار پر پاکستانی فلم بنائی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ لکھیں