عمران عباس نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ ‘گزشتہ 5 سال میں والدین اور بہن کا انتقال ہو گیا’۔

“مشہور فلموں اور ڈراموں کے ذریعے اپنی پہچان بنانے والے اداکار عمران عباس نے کہا ہے کہ ان کی بہن اور والدین کا انتقال 5 سال میں ہوا، اداکار والدہ کے انتقال پر بات کرتے ہوئے جذباتی ہو گئے۔”
عمران عباس نے حال ہی میں میزبان ندا یاسر کے پروگرام ‘شانِ سحر’ میں شرکت کی جہاں وہ اپنے والد، بہن اور خاص طور پر اپنی والدہ کی موت پر گفتگو کرتے ہوئے جذباتی ہو گئے۔ پروگرام کے دوران عمران عباس کا کہنا تھا کہ ان کے 6 بہن بھائی تھے جو انتقال کر گئے، میں سب سے چھوٹا ہوں لیکن بہن کے انتقال کے بعد اب 5 رہ گئے ہیں۔اداکار نے بتایا کہ گزشتہ 4-5 سالوں میں ان کے ساتھ بہت سی بری چیزیں ہوئیں، اس دوران ان کی والدہ، والد اور بہن کی موت ہوگئی۔اس کا کہنا تھا کہ وہ اپنے والدین کے ساتھ ایک گھر میں رہتا تھا لیکن والدین کے انتقال کے بعد اب وہ اکیلا رہتا ہے۔ اداکار نے کہا کہ انسٹاگرام پر بہت سے لوگ کہتے ہیں کہ میں ہمیشہ مختلف ممالک کا سفر کرتا رہتا ہوں، جب ماں چلی جاتی ہے تو گھر نہیں رہتا، گھر وہ ہوتا ہے جہاں کوئی آپ کے آنے، فون کرنے یا الوداع کہنے کا انتظار کر رہا ہوتا ہے۔عمران عباس نے بتایا کہ اگر وہ رات 3 بجے گھر واپس آئے تو بھی ان کی والدہ انتظار کر رہی ہوں گی، ‘ماں فون کر کے پوچھیں گی کہ آپ کب آئیں گے، اس پر میں کہتا ہوں کہ ماں پلیز مجھے کام کرنے دیں۔’اپنی والدہ کی زندگی کے آخری لمحات کو یاد کرتے ہوئے اداکار نے کہا کہ ‘جب میں لندن جا رہا تھا تو میری والدہ نے بلاکر سے کہا، ‘اب جاؤ، میں تمہیں فون نہیں کروں گی، تم کام کرو، مجھے تمہیں اب یاد نہیں۔’ آؤ۔” اس کی آنکھوں میں عجیب سے آنسو تھے۔”اب میں سوچتا ہوں کہ ہم کتنے عجیب ہیں کہ ہم اپنی زندگی میں والدین کو اہمیت نہیں دیتے، یہ ایک نعمت ہے کہ کوئی آپ کو بلاتا ہے، آپ سے پیار کرتا ہے اور آپ کا انتظار کرتا ہے، لیکن ہم ان کی پرواہ نہیں کرتے، ہاں” اس نے دکھ سے کہا۔ . یہ سوچ کر فون نہ اٹھائیں کہ وہ واپس کال کریں گے، لیکن پھر وقت آتا ہے۔عمران عباس نے کہا کہ میری والدہ مجھے ہمیشہ ڈانٹتی تھیں کہ میں نے قرآن پاک مکمل نہیں کیا لیکن ان کی وفات کے بعد میں نے پہلی بار قرآن پاک مکمل کیا۔جس کی تصویر پر انہوں نے لکھا کہ ان کی والدہ 15 دسمبر کو انہیں ہمیشہ کے لیے چھوڑ کر چلی گئیں۔ آج سے 2 سال قبل ان کے والد بھی اس دنیا سے رخصت ہو گئے۔

اپنا تبصرہ لکھیں